اپنے براوزر میں جاوا سکرپٹ کو کیسے فعال کرینگے

زمانہ بدل گیا ہے اور وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ پچھلے کچھ سالوں میں جاوا سکرپٹ، جس کا استعال پہلے بہت محدود تھا، اب ویب ڈویلپمنٹ کا ایک بنیادی جز بن گیا ہے۔ آج، جاوا سکرپٹ کا استعمال ویب کیلئے اتنا ضروری ہو گیا ہے کہ زیادہ تر انٹرنیٹ براوزر اس کو چلانے کیلئے علیٰحدہ سے ایک انجن اپنے براوزر میں شامل کرتے ہیں۔

جاوا سکرپٹ ویب پر استعمال کی جانے والی ایک بہت ہی دلچسپ ٹیکنالوجی ہے، اور اپنے براوزر میں اس کو تمام ویب سائٹس کیلئے غیر فعال کرنے کی تجویز کوئی بھِی نہیں دیگا۔ زیادہ تر مشہور ویب سائٹس، جاوا کے بنیاد پر بنی ہیں، جس کا مطلب ہے کہ وہ اپنے بہت سارے انٹیریکٹیو فیچرز چلانے کیلئے جاوا سکرپٹ کا استعمال کرتے ہیں، جواستعمال کنندگان کو زہادہ لطف اندوز ہونے کی سہولت دیتا ہے۔

جب جاوا سکرپٹ غیر فعال ہوگی، تو آپ کا براوزر بہت سارے انٹیریکٹیو سہولیات نہیں چلا سکے گا جیسے اشتہارات، اینی میشنز یا آواز۔ تاہم یہاں پر خوشخبری کی بات یہ ہے کہ جاوا سکرپٹ کو براوزر میں فعال کرنا بہت آسان ہے۔ ساتھ ساتھ، ایسے طریقے بھی ہیں جن سے آپ جاوا سکرپٹ صرف مخصوص ویب سائٹس کیلئے غیر فعال کر سکتے ہیں، بجائے اس کے، کہ آپ اس کو مکمل طور پر پورے براوزر کیلئے غیر فعال کر دیں۔ 

تو اگر آپ نے اپنے براوزر میں جاوا سکرپٹ کو غیر فعال کیا ہوا ہے اور اب چاہتے ہیں کہ اس کو دوبارہ فعال کردیں، تو ہم آپ کی مدد کیلئے حاضر ہیں۔ ہم نے رہنمائی کیلئے یہ گائیڈ تیار کیا ہے جو آپ کو عام طور پر استعمال ہونے والے پانچ مشہور براوزرز میں جاوا سکرپٹ فعال کرنے کا طریقہ بتائے گا۔ اس کے علاوہ، ہم آپ کو یہ بھِی بتائینگے کہ جاوا سکرپٹ کیا ہے، یہ کس لئے استعمال ہوتا ہے اور آپ حقیقیت میں اس کی مدد سے کیا کر سکتے ہیں۔

آپ کے ویب براوزر میں جاوا سکرپٹ فعال ہے۔ اگر آپ جاوا سکرپٹ غیر فعال کرینگے، تو یہ لکھائی تبدیل ہو جائے گی۔

ویب ڈویلپرز کیلئے ہدایات

آگر آپ چاہتے ہیں کہ اُن چھ مشہور براوزر کے استعمال کنندگان کو آگاہ کریں جن کے براوزر پر جاوا سکرپٹ غیر فعال ہے، تو آپ ضرور چاہے گے کہ اس ویب سائٹ کو دیکھیں۔ آپ خوشی سے نیچے دیا گیا کوڈ استعمال کر سکتے ہیں اور اس میں اپنی مرضی کے مطابق تبدیلی کر سکتے ہیں۔

<noscript>
For full functionality of this site it is necessary to enable JavaScript.
Here are the <a href="https://www.enablejavascript.io/">
instructions how to enable JavaScript in your web browser</a>.
</noscript>

اُن استعمال enablejavascript.io پر ہم نے کنندگان کے براوزر استعال کو پُر لطف بنایا ہے جن کا سکرپٹ غیر فعال تھا:

  • براوزر کے بارے میں ہدایات کو پیچ میں سب سے اوپر ڈالا ہے۔
  • تمام تصاویر ایک ہی سیدھ میں، بڑے سائز میں دئے ہیں تاکہ سمجھنے میں آسان ہو۔

جتنا آپ چاہتے ہیں اُتنا ہی ہم بھی چاہتے ہیں کہ آپ کے ویب سائٹ کے صارفین کا جاوا سکرپٹ فعال ہو۔

گوگل کروم

  1. اپنے ڈیوائس پر گوگل کروم کھولیں
  2. اپنے سکرین کے اوپر دائیں جانب موجود مینو کے آئی کان )تین نکتوں( پر کلک کریں۔
  3. ڈراپ ڈاون مینو سے "سیٹنگز" کا انتخاب کریں – نیچے کی جانب سے تیسرا آپشن۔
  4. اب بائیں سائید بار مینو میں "پرائیویسی اینڈ سیکیورٹی" پر کلک کریں۔
  5. "پرائیویسی اینڈ سیکیورٹی" کے اندر "سائٹ سیٹنگز" پر جائیں۔
  6. "سائٹ سیٹنگز" کے اندر نیچے سکرول کریں یہاں تک کہ آپ کو "جاوا سکرپٹ" مل جائے۔ اس پر کلک کریں۔
  7. انتخاب میں "الاوڈ )ریکیمینڈڈ(" کو فعال کرلیں۔ جب فعال کرینگے تو یہ نیلے رنگ میں تبدیل ہو جائے گا۔
  8. مبارک ہو، آپ نے اپنے گوگل کروم براوزر میں جاوا سکرپٹ فعال کر دیا ہے۔

انٹرنیٹ ایکسپلورر

  1. اپنا انٹرنیٹ ایکسپلورر لانچ کرکے کوئی ونڈو کھولئے۔
  2. "ٹولز" پر کلک کریں – یہ عام طور پر مینو بار کے سب سے اوپری حصے میں موجود ہوتا ہے۔ اس کے بعد آپ کے سامنے جو آپشنز آتے ہیں اُن میں "انٹرنیٹ آپشنز" کا انتخاب کریں۔ اس کو جلدی معلوم کرنے کیلئے آپ "الٹ کی" کا استعمال بھی کر سکتے ہیں۔
  3. "سیکیورٹی ٹیب" پر کلک کریں۔
  4. "کسٹم لیول" بٹن پر ٹیپ کریں۔
  5. پیچ کو تب تک نیچے سکرول کرتے رہیں جب تک آپ کو "سکرپٹنگ" کی ہیڈنگ نہیں مل جاتی۔
  6. جاوا سکرپٹ کو فعال کرنے کیلئے "ایکٹیو سکرپٹنگ" کا انتخاب کر لیں۔
  7. اب "او کے" کلک کریں۔
  8. اپنا براوزر ریفریش کر دیں۔

مائیکروسافٹ ایج

  1. اپنا مائیکروسافٹ ایج براوزر کھولئے۔
  2. مینو ٹیب کھولنے کیلئے سب سے اوپر دائیں طرف تین نکتوں والے نشان پر کلک کریں۔
  3. مینو ٹیب پر سیٹنگز کا انتخاب کریں۔
  4. اپ بائیں جانب سیٹنگز پین میں"سائٹ پرمیشن" پر کلک کریں۔
  5. "جاوا سکرپٹ" کا انتخاب کریں۔
  6. "الاوڈ )ریکیمینڈڈ(" کو آن کر لیں۔

موزیلا فائیر فاکس

  1. اپنا موزیلا فائیر فاکس براوزر لانچ کریں اور کوئی ونڈو کھول لیں۔
  2. ایڈریس بار میں “about:config” ٹائپ کریں اور انٹر کا بٹن دبا دیں۔
  3. سامنے آنے والے خبرداری کے پیغام کے نیچے بنے ہوئے “Accept the Risk and Continue” کا بٹن دبا دیں تاکہ آپ پریفرینسس سرچ باکس پیج تک جا سکیں۔
  4. اب پریفرینسس سرچ باکس میں “javascript.enabled” انٹر کردیں۔
  5. سرچ کے نتائج میں “javascript.enabled” کا آپشن تلاش کرکے اس کو آن کردیں۔
  6. اپنا براوزر ریفریش کر دیں۔

اوپیرا

  1. اپنا اوپیرا منی براوزر لانچ کریں۔
  2. "ایزی سیٹ اپ" کا مینو کھولیں۔
  3. ایزی سیٹ اپ مینو کو نیچے سکرول کریں اور “Go to browser settings” کا انتخاب کریں۔
  4. نیچے سکرول کریں تاکہ آپ "سائٹ سیٹنگز" کے آپشن کو دیکھ سکیں، پھر اس کو کلک کردیں۔
  5. "سائٹ سیٹنگز" کے نیچے وہ اپشن تلاش کریں جہاں جاوا سکرپٹ لکھا ہو، اس کو منتخب کریں۔
  6. جاوا سکرپٹ کو فعال بنانے کیلئے "الاوڈ )ریکیمینڈڈ(" کا انتخاب کریں۔ جب فعال ہوگا تو یہ نیلے رنگ کا ہو جائے گا۔
  7. مبارک ہو، آپ نے جاوا سکرپٹ فعال کر لیا ہے۔

ایپل سفاری

  1. اپنے ڈیوائس کے "ٹولز" سیکشن میں جائیں۔
  2. "پریفرینسس" کا انتخاب کریں۔
  3. سیکیورٹی آئی کان پر ٹیپ کریں۔
  4. اُس چیک باکس کو فعال کریں جہاں “Enable JavaScript” لکھا ہے۔
  5. اپنے براوزر کو ری سٹارٹ کر لیں۔

جاوا سکرپٹ کے بارے میں

جاواسکرپٹ کیا ہے؟

جاوا اسکرپٹ ایک "کلائنٹ سائیڈ" سکرپٹنگ لینگویج ہے جو بنیادی طور پر ویب پیجز پر ہر قسم کی متحرک خصوصیات پیدا کرنے اور شامل کرنے کے لئے استعمال ہوتی ہے۔ ٹیکنالوجی کی دنیا میں اس کے تیز ارتقاء کے ساتھ، جاوا اسکرپٹ جدید ویب ڈویلپمنٹ کا ایک بنیادی جُز بن گیا ہے۔

یہ روایتی سافٹ ویئر ڈیزائن کے لینگویجز کے ساتھ عمدہ کام کرتا ہے اور اس کی انوکھی خصوصیات اسے ان دوسرے لینگویجز سے الگ کرتی ہیں۔ جہاں CSS اور HTML ایسی زبانیں ہیں جو ویب پیجز میں سٹائل اور ساخت کا اضافہ کرتی ہیں، تو جاوا اسکرپٹ ویب پیجز کو اینٹیریکٹیو عناصر شامل کرتا ہے جو صارف کے لطف کو دوبالا کرتے ہیں۔۔

تو، کیا براؤزنگ سیشن کے دوران، ویب پیج کو دوبارہ لوڈ کیے بغیر، آپ کے ڈیوائس پر کچھ تبدیل ہوتا ہے، یا پاپ اپ کی شکل میں سامنے آ جاتا ہے؟ جی ہاں، یہ جاوا اسکرپٹ ہے۔

آج جاوا اسکرپٹ اتنا متاثر کن ہے کہ اسے گوگل کروم، سفاری، موزیلا فائر فاکس، اوپیرا، انٹرنیٹ ایکسپلورر، مائیکروسافٹ ایج جیسے جدید ویب براؤزر استعمال کرتے ہیں۔ مقبول موبائل ڈیوائسز جیسے اینڈرائڈ اور آئی فون بھی جاوا اسکرپٹ سے مزئین براؤزر اور ایپلی کیشنز چلانے کے قابل ہیں۔

جب آپ کو اس کی اہمیت معلوم ہو تو جاوا اسکرپٹ کے کام کرنے کے طریقے کو سمجھنا تھوڑا آسان ہوجاتا ہے، لہذا آئیے اس کے بارے میں مزید جانتے ہیں۔

جاوا سکرپٹ کی تاریخ

مبینہ طور پر، ویب کی ترقی کے لئے سب سے زیادہ استعمال ہونے والے کوڈوں میں سے ایک کو 25 سال ہوچکے ہیں۔ انٹرنیٹ کی ترقی کی وجہ سے جاوا اسکرپٹ نے وہ مقام حاصل کیا ہے جس کی پیش گوئی کبھی نہیں کی گئی تھی۔ اس کے آغاز کے بعد سے، جاوا اسکرپٹ نے نہ صرف ایک طاقتور پروگرامنگ لینگویج کی حیثیت سے اس کی جگہ کو مضبوط کیا ہے بلکہ جدید ویب ڈویلپمنٹ میں استعمال کے نئے شعبے بھی متعارف کرائے ہیں۔

اسکیم، جاوا اور سیلف سے متاثر ہو کر، جاوا اسکرپٹ 1995 میں برینڈن ایچ نے اُس وقت تیار کیا تھا جب وہ نیٹ اسکیپ کمیونیکیشنز میں کام کرتے تھے۔ 1990 کی دہائی میں، نیٹ سکیپ کمیونیکیشنز نے اپنے براؤزر - نیٹ سکیپ نیویگیٹر کی توسط سے انٹرنیٹ پر خاطر خواہ اپنی موجودگی کا لوہا منوایا، جس کو پہلے سے موجود موزیک ویب براؤزر کے مقابلے میں زیادہ پسند کیا گیا۔

نیٹ سکیپ کمیونیکیشنز کو مارک اینڈریسن نے مشترکہ طور پر قائم کیا تھا، جو الینوائے یونیورسٹی میں ڈویلپرز کی ایک ٹیم کا حصہ تھے جس نے 1993 میں موزیک براؤزر کے پراجیکٹ پر کام کیا تھا۔ جیسے جیسے ویب نے مقبولیت حاصل کی، ٹیک کمپنیوں نے انٹرنیٹ پر سب سے زیادہ موثر براؤزر تیار کرنے کی دوڑ شروع کی۔

مائیکروسافٹ نے بھی اس دوڑ میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا اور نیٹ سکیپ کو قابو کرنے کے لئے انٹرنیٹ ایکسپلورر پروجیکٹ کا آغاز کیا۔ اس سے براؤزر شیئر مارکیٹ میں بالادستی حاصل کرنے کے لئے مائیکروسافٹ اور نیٹ سکیپ کے مابین براؤزر کی شدید جنگ شروع ہوئی۔

اس وقت، ویب ڈویلپرز ویب پیجز پر ڈائنامک خصوصیات تیار کرنے یا شامل کرنے کے لئے اسکرپٹ لینگویج کے خواہاں تھے۔ ابتدائی طور پر انہوں نے جاوا پر اپنی نگاہیں مرکوز کیں لیکن آخر کار یہ محسوس ہوا کہ صارف کے لطف کو بڑھانے کے لئے ایک ایسی لینگویج کی ضرورت ہے جو زیادہ لچکدار ہو۔

نیٹ اسکیپ کو اس کا احساس ہوا اور اس نے فیصلہ کیا کہ ایک ایسی اسکرپٹنگ لینگویج بنائی جائے جو ہلکی ہو اور جس سے ویب ڈویلپرز کو ویب پیجز پر انٹیریکٹیو خصوصیات شامل کرنے کا موقع مل سکے۔ وقت کا جوہر تھا کہ ٹھیک اُسی وقت جاوا اسکرپٹ کا والد تصور کئے جانے والا شخص اُن کے ساتھ شامل ہوا۔

1995میں، برنارڈ ایچ ساتھ نیٹ سکیپ نے معاہدہ کیا کہ وہ نیٹ سکیپ نیویگیٹر 2.0 براؤزر کی ریلیز کے لئے ڈائنامک لینگویج بنائیں اور اس کو اُن کے براوزر میں شامل کریں۔ یہ پراجیکٹ ایچ کے سامنے ایک ایسے پراجیکٹ کے طور پر رکھا گیا جس کو جلدی مکمل کرنا تھا۔ تاہم، اس نے اسے کسی ایسی چیز پر کام کرنے کے موقع کے طور پر دیکھا جس کے بارے میں وہ بہت پرجوش تھا اس لئے اُس نے نیٹ اسکیپ کے ساتھ مل کر کام کرنے کی حامی بھر لی۔ اور یوں ایک لائٹ ویٹ اسکرپٹنگ لینگویج کے خیال نے جنم لیا۔ ایچ نے اس کا نام موچا رکھا تھا لیکن بعد میں اس کا نام لائیو اسکرپٹ رکھ دیا گیا۔ پہلا عملی پروٹو ٹائپ ایچ نے دس دن کے قلیل مدت میں ہی تیار کر لیا تھا جونیٹ اسکیپ نیویگیٹر 2.0 بیٹا براؤزر میں لاگو کرنے کے لئے تیار تھا۔

براؤزر شیئر مارکیٹ میں اپنی بالا دستی کو برقرار رکھنے کے لئے، نیٹ اسکیپ نے جاوا نامی پروگرامنگ زبان کے ڈویلپرز، سن مائیکرو سسٹمز کے ساتھ شراکت کرنے پر اتفاق کیا۔ اس اتحاد کا مطلب یہ تھا کہ سن مائیکرو سسٹمز نے جاوا استعمال کرنے والے کمیونٹی کے لئے جاوا دستیاب بنانے کے لئے نیٹ سکیپ نیویگیٹر کو بطور ایک ویب ترسیلی پلیٹ فارم کے استعمال کا حق حاصل کرلیا۔

تقریبا ایک سال بعد، 1996 میں، جاوا کمیونٹی میں قبولیت حاصل کرنے کی خاطر اور ایک مارکیٹنگ حکمت عملی کے طور پر لائیو اسکرپٹ کا نام تبدیل کرکے جاوا اسکرپٹ کر دیا گیا۔ جاوا اسکرپٹ کو نیٹ اسکیپ نیویگیٹر 2.0 براؤزر میں کلائنٹ سائیڈ کی معمولی پروجیکٹس کے لئے اسکرپٹ کی لینگویج کے طور پر پیش کیا گیا تھا، جبکہ جاوا کو ویب کے مختلف مسائل کے حل کرنے کے لئے ایک خصوصی ٹول کے طور پر توثیق کیا گیا۔

اس کے بعد ، مائیکروسافٹ نے جاوا سکرپٹ کو ریورس انجینئرڈ کرکے اپنے انٹرنیٹ ایکسپلورر 3 کے لئے اس کا ایک کسٹم ورژن تیار کیا۔ اس بات سے بچنے کے لئے کہ سن مائیکرو سسٹمز کے ساتھ قانونی پیچیدگیاں پیدا نہ ہو، اس کو جے سکرپٹ کا نام دیا گیا، کیونکہ جاوا برانڈ سن مائیکروسسٹمز کی ملکیت تھی اور اسے نیٹ اسکیپ کیلئے لائسنس کیا ہوا تھا۔

صاف ، لچکدار اور نان ڈویلپرز کیلئے قابل رسائی ہونے کی وجہ سے، جاوا اسکرپٹ (اور جے اسکرپٹ) انتہائی مقبول تھیں، کیونکہ اس سے ویب پیجزکو زیادہ انٹرایکٹو ہونے کے ساتھ ساتھ متحرک بھی بنا دیا تھا۔

بدقسمتی سے ، ان دونوں کی مقبولیت حفاظتی اقدامات کی کمی کی وجہ سے روز بروز کم ہونا شروع ہوئی، اس کی وجہ یہ تھِی کہ لوگ بہت کم یا بغیر کسی علم کے چھوٹے چھوٹے کوڈ لکھ کر استعمال کرنے لگے اور وہ نہیں جانتے تھے کہ وہ کیا کر رہے ہیں۔ اضافی طور پر ، جاوا اسکرپٹ کا استعمال اکثر لوگوں کے لطف کو دوبالا کرنے کی بجائے اُن کو پریشان کرنے کے لئے کیا جانے لگا (جیسے پاپ اپ اشتہارات ، براؤزر سنفنگ وغیرہ) ۔

اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے ایک اہم جواب ECMA سٹینڈرڈائزیشن کی شکل میں آیا۔ نیٹ اسکیپ اور سن مائیکرو سسٹمز نے ECMA انٹرنیشنل کے ساتھ جاوا اسکرپٹ کو معیاری بنانے کے لئے دستاویزات پیش کیں ، جس کو معیار کی میزبانی کیلئے مقرر کیا گیا۔ اس طرح کی نئی لینگویج کے لئے سٹینڈرڈائزیشن ایک اہم اقدام تھا۔

اس نے جاوا اسکرپٹ کو ایک وسیع تر صارفین کے لئے کھول دیا اور ڈویلپرز کو اسکرپٹ لینگویج میں اپنے خیالات کے اظہار کا موقع مل گیا۔ سٹینڈرڈائزیشن نے اس مقصد کو بھی پورا کیا کہ اُن لوگوں کا راستہ روک سکے جو کوڈ کو منفی سرگرمیوں کیلئے استعمال کرتے تھے۔ سن کے جاوا ٹریڈ مارک کی خلاف ورزی سے بچنے کے لئے ، ECMA کمیٹی نے سٹینڈرڈائزیشن لینگویج کو ECMAScript کا نام دینے کا فیصلہ کیا۔

اس سے اور بھی غلط فہمی پیدا ہوئی ، لیکن بالآخر ECMAScript اس تصریح کا حوالہ دینے کے لئے استعمال ہوا ، اور جاوا اسکرپٹ (آج تک) اسکرپٹ لینگویج کا حوالہ دینے کے لئے استعمال ہوتا تھا۔

جاوا سکرپٹ کس لئے استعمال ہوتا ہے؟

جاوا اسکرپٹ کا استعمال اس کے اجراء کے بعد کے سالوں کے دوران بدل گیا ہے۔ اس موقع پر آپ یہ ضرورسوچ رہے ہونگے کہ 10 دن کے اندر تیار کئے جانے والے ایک اسکرپٹ لینگویج نے کس طرح انٹرنیٹ کو مکمل طور پر بدلنے میں کردار ادا کیا؟ آئیے جانتے ہیں:

ڈائنامک ویب پیجز

جاوا اسکرپٹ کا استعمال مختلف قسم کے ڈائنامک خصوصیات کو ویب پیجز میں شامل کرنے کے لئے کیا جاتا ہے جیسے مختلف قسم کے صوتی و بثری اثرات اور افعال وغیرہ۔ یہ صارفین کو ویب پیج کو ریفریش کئے بغیر نئی تصاویر اور دوسری چیزوں کو لوڈ کرنے کی سہولت دیتا ہے۔

ویب اور موبائل ایپ ڈویلپمنٹ

جاوا اسکرپٹ کے بارے میں ایک سب سے طاقتور چیز یہ ہے کہ اس میں لائبریریوں اور فریم ورک کی ایک وسیع رینج شامل ہے جو کراس پلیٹ فارم ویب اور موبائل ایپلی کیشنز بنانے کے لئے استعمال کی جا سکتی ہے۔

گیم ڈویلپمنٹ

جاوا اسکرپٹ ویب پر مبنی گیمز بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ اس میں لائبریریوں اور فریم ورکس کی ایک بڑی تعداد شامل ہے جسے لوگ 2D یا 3D گیم بنانے کے لئے استعمال کرسکتے ہیں۔

سرور سے جُڑی سہولیات

ویب سائٹوں اور ایپس بنانے کے علاوہ ، ڈویلپرز جاوا اسکرپٹ کو Node.js کا استعمال کرتے ہوئے محفوظ ویب سرور اور بیک اینڈ ڈویلپمنٹ کی تیاری کر سکتے ہیں۔

جاوا سکرپٹ فعال کرنے کے فوائد

آپ کے براؤزر میں جاوا اسکرپٹ کو فعال کرنے کے فوائد نقصانات سے کہیں زیادہ ہیں، جیسا کہ انٹرنیٹ پر اس کی نمایاں اور مروجہ استعمال سے ظاہر ہوتا ہے۔ آپ جاوا اسکرپٹ کو فعال کرتے وقت ان فوائد سے لطف اندوز ہوتے ہیں جن میں شامل ہیں: 

زیادہ انٹیریکٹیو ویب سائٹس

مزید انٹرایکٹو ویب سائٹس اور انٹرفیس جیسے کہ متحرک تصاویر ، ویڈیوز ، اشتہاری بینرز اور ہم عصر ویب تجربے کے دیگر اہم مقامات تک رسائی۔

تیز رفتاری

جاوا اسکرپٹ ایک کلائنٹ سائیڈ اسکرپٹ ہے ، جس سے ویب پیج پر صارف کی انٹیریکٹیوٹی کو تیز کیا جاتا ہے کیونکہ اس سے سرور سے بار بار جُڑنے کی درخواستیں کم ہوجاتی ہیں۔

سرور پر دباو میں کمی

چونکہ جاوا اسکرپٹ کلائنٹ سائیڈ پر کام کرتا ہے ، اس سے سرور سے رابطہ قائم کرنے کے لئے درکار وقت کم سے کم ہوجاتا ہے ، جس کے نتیجے میں بینڈوتھ اور بوجھ دونوں محفوظ ہوتے ہیں۔

جاوا سکرپٹ کے محدودات

اگرچہ ویب پیجز اور صارف کی انٹیریکٹیوٹی کو بہتر بنانے کے لئے جاوا اسکرپٹ کو استعمال کرنے کے بہت سارے طریقے ہیں ، لیکن ایسی چھوٹی چھوٹی چیزیں بھی ہیں جو جاوا اسکرپٹ نہیں کرسکتی ہیں۔ یہاں ہم جاوا اسکرپٹ کی کچھ محدودات کے بارے میں جانے گے:

  1. جاوا اسکرپٹ کی سب سے اہم قید یا کمی یہ ہے کہ اس کو اپنا کام کرنے کیلئے کوئی ایک مخصوص باڈی نہیں ہے۔
  2. جاوا اسکرپٹ آپ کے پیج کے سورس یا تصاویر کی حفاظت نہیں کرسکتا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ کے ویب پیج پر موجود تصاویر کو کوئی صارف اپنے ڈیوائس پر آسانی سے ڈاؤن لوڈ کرسکتا ہے۔
  3. جاوا اسکرپٹ میں کسی بھی ملٹی پروسیسر کی قابلیت نہیں ہے۔ لہٰذا اس کا میموری پر کوئی کنٹرول نہیں ہے۔
  4. آخری بات یہ کہ جاوا اسکرپٹ کسی دوسرے ڈومین پر موجود ویب پیجز تک رسائی حاصل نہیں کرسکتا۔ اگرچہ صارف بیک وقت مختلف ڈومینز سے ویب پیجز دیکھ سکتا ہے لیکن ڈومین کے ویب پیجز پر چلنے والا جاوا اسکرپٹ کسی دوسرے ڈومین کے ویب پیجز پر کسی بھی ڈیٹا تک رسائی حاصل کرنے کے قابل نہیں ہوگا۔

جاوا سکرپٹ کو کیسے غیر فعال کرینگے

جتنا آپ کے براؤزر پر جاوا اسکرپٹ کو فعال کرنا بہت زیادہ فائدہ مند ہے تو اسی طرح صارفین کسی بھی وقت سیکیورٹی کے لئے عارضی طور پر اسے غیر فعال بھی کرنا چاہے گے۔ جاوا اسکرپٹ کو موزلہ فائر فاکس ، گوگل کروم ، اوپیرا ، سفاری ، مائیکروسافٹ ایج ، اور انٹرنیٹ ایکسپلورر جیسے بیشتر جدید ویب براؤزرز میں غیر فعال کیا جاسکتا ہے۔ 


اگر آپ نے جاوا اسکرپٹ کو اپنے براؤزر میں غیر فعال کیا ہوا ہے تو اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ پہلے سے ہی جاوا اسکرپٹ کو غیر فعال کرنے کے بارے میں جانتے ہیں، یا یہ آپ کے براؤزر میں پہلے سے ہی خود بخود فعال نہیں ہے۔ اگر فعال ہے تو یہاں پڑھیں کہ آپ کے ڈیوائس پر ترجیحی براؤزر کے مطابق جاوا اسکرپٹ کو غیر فعال کیسے کریں۔

گوگل کروم گوگل کروم

  1. اپنا گوگل کروم براوزرکھولیں۔
  2. مینو کے آئی کان )تین نکتوں( پر کلک کریں جو عام طور پر آپ کے براوزر کے اوپر دائیں جانب موجود ہوتا ہے۔
  3. "سیٹنگز" پر کلک کریں۔
  4. اب بائیں سائید بار مینو میں "پرائیویسی اینڈ سیکیورٹی" پر کلک کریں۔
  5. "پرائیویسی اینڈ سیکیورٹی" کے اندر "سائٹ سیٹنگز" بٹن پر کلک کریں۔
  6. یہاں"جاوا سکرپٹ" کا سیکشن تلاش کریں اور غیر فعال کر دیں۔
  7. ڈن پر کلک کردیں اور اپنا براوزر ری سٹارٹ کردیں۔

انٹرنیٹ ایکسپلورر انٹرنیٹ ایکسپلورر

  1. اپنے ڈیوائس پر انٹرنیٹ ایکسپلورر براوزر کھولیں۔
  2. "ٹولز" پر کلک کریں – یہ عام طور پر براوزر کے سب سے اوپری دائیں حصے میں موجود ہوتا ہے۔
  3. اس کے بعد آپ کے سامنے جو ڈراپ ڈاون مینو اتا ہے اُس میں "انٹرنیٹ آپشنز" کا انتخاب کریں۔
  4. اس کے بعد "سیکیورٹی ٹیب" پر کلک کریں۔
  5. "سیکیورٹی" کے کالم میں"کسٹم لیول" بٹن پر کلک کریں تاکہ ایک اور پیج کُھل جائے۔
  6. پیچ کو تب تک نیچے سکرول کرتے رہیں جب تک آپ کو "ایکٹیو سکرپٹنگ" نہیں مل جاتی۔ اس کے غیر فعال کردیں۔
  7. اپنے براوزر کو ری سٹارٹ کر لیں۔

موزیلا فائیر فاکس موزیلا فائیر فاکس

  1. اپنا موزیلا فائیر فاکس براوزر کھولیں۔
  2. ایڈریس بار میں “about:config” ٹائپ کریں اور انٹر کا بٹن دبا دیں۔
  3. آپ کے سکرین پر سامنے آنے والے خبرداری کے پیغام کو قبول کرلیں۔
  4. اب سرچ باکس میں “javascript.enabled” ٹائپ کرکے غیر فعال کرنے کے آپشن کو منتخب کرلیں۔
  5. اگر آپ کے سامنے کامیابی کا میسیج آ جاتا ہے تو سمجھ لیں کے آپ نے جاوا سکرپٹ کو غیر فعال کر دیا ہے۔